Categories : The Latest

کان نہ رکھنے والی وہیل ساتھیوں کی گفتگو کیسے سن لیتی ہے؟ معمہ حل

Hits: 0

سمندری حیات کی عظیم الحبثہ ’وہیل‘ قوت سماعت نہ ہونے کے باوجود ایک دوسرے سے رابطہ بھی کرتی ہیں اور ایک دوسرے کو جواب بھی دیتی ہیں۔

تحقیق سے یہ پتا چلا تھا کہ وہیل ہر سال ایک نیا گانا تیار کرتی ہے جسے وہ پورا سال گنگناتی رہتی ہے اور اب تحقیق یہ بھی بتاتی ہے کہ وہیل ایک دوسرے کو پکارتی ہیں اور پکار کا جواب دیتی ہیں۔ وہ کورس کی صورت میں بھی ایک دوسرے سے گفتگو کرتی ہیں لیکن اچنبھے کی بات یہ ہے کہ وہیل قوت سماعت سے محروم ہوتی ہے تو پھر وہ ایک دوسرے کی پکار کیسے سنتی ہیں۔ سائنس دانوں نے اس سوال کا جواب ڈھونڈ لیا ہے۔

امریکا کے دو تحقیق کاروں نے وہیل کی کم فریکوئنسی (10 to 200 hertz) رکھنے والی آواز کو بھی سن لینے کی حیرت انگیز صلاحیت کا مطالعہ کیا ہے۔ اس کے لیے سائنس دانوں نے ایک تھری ڈی کمپیوٹرائزڈ ٹوموگرافی اسکینر کو استعمال کیا۔ اسکینر کے ذریعے حنوط کی گئی وہیل کی اسکیننگ کی۔

اسکین کے ذریعے حاصل ہونے والی معلومات سے انکشاف ہوا کہ وہیل کے ڈھانچے میں موجود دو مخصوص ہڈیاں اینٹینے کا کام کرتی ہیں جو صوتی فریکوئنسی کو وصول کرنے اور سگنل بھیجنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ جبڑے کی انہی ہڈیوں کی مدد سے وہیل ایک دوسرے کو ڈھونڈنے، رابطے اور گفتگو کرنے میں کامیاب ہوتی ہیں۔

سان ڈیگو کیلی فورنیا میں ہونے والی تجرباتی حیاتیات کانفرنس 2018ء میں دونوں سائنس دانوں نے اپنا مقالہ پیش کیا۔ سائنس دانوں کا کہنا تھا کہ وہیل نہایت کم فریکوئنسی والی آواز بھی سُن لیتی ہیں اور یہی فریکوئنسی دیوہیکل بحری جہاز کی ویسلز کی بھی ہوتی ہے جس کے باعث وہیل بحری جہاز کی جانب متوجہ ہوتی ہیں۔

اس تحقیق سے بحری جہاز بنانے والے اداروں کو بھی کافی مدد ملے گی اور وہ ویسلز کی فریکوئنسی کو تبدیل کر کے وہیل اور جہاز کے ٹکراؤ کے امکانات کو کم کرسکتے ہیں۔

واضح رہے کہ یہ تحقیق اُن دو وہیلز پر کی گئی جو امریکا کے ساحلی علاقے میں ایک ریسکیو مہم کے دوران ہلاک ہوگئی تھیں جس کے بعد انہیں سائنس دانوں کی تحقیق کے لیے حنوط کردیا گیا تھا۔

The post کان نہ رکھنے والی وہیل ساتھیوں کی گفتگو کیسے سن لیتی ہے؟ معمہ حل appeared first on i14 News.

Powered by WPeMatico

فیس بک کا تلاش رشتہ کیلیے فیچر متعارف کرانے کا اعلان

Hits: 0

دنیا میں سماجی رابطے کی سب سے بڑی ویب سائٹ فیس بک اب رشتہ تلاش کرنے میں بھی آپ کی مدد کرے گی۔

کیلی فورنیا میں فیس بک ڈویلپرز کی سالانہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے فیس بک کے سربراہ مارک زکر برگ نے کہا کہ فیس بک کے دوسو ملین صارفین کے مطابق وہ سنگل ہیں اور اس نئے فیچر کے ذریعے شریک حیات تلاش کرنے میں ان کی مدد کی جاسکتی ہے۔

فیس بک انتظامیہ کے مطابق اس نئے فیچر کے لیے صارفین کو آئندہ اپنا ایک علیحدہ پروفائل تیار کرنا ہوگا جس میں ان کی پرائیویسی کا مکمل خیال رکھا جائے گا اور وہ جو کوائف چاہیں گے صرف وہ ہی ظاہر کیے جائیں گے۔ اس نئے فیچر کو ٹیسٹ کرنے کے بعد اس کا باقاعدہ آغاز کیا جائے گا۔

The post فیس بک کا تلاش رشتہ کیلیے فیچر متعارف کرانے کا اعلان appeared first on i14 News.

Powered by WPeMatico

صرف تین ہفتوں میں پانی میں گھل کر ختم ہوجانے والی بوتل

Hits: 0

پلاسٹک اور اس سے بنی بوتلیں پوری دنیا اور خصوصاً سمندروں کےلیے خطرہ بن چکی ہیں جب کہ یہ بوتلیں سینکڑوں برس میں بھی ختم نہیں ہوتیں اور سمندری جانوروں سمیت انسانوں کےلیے بھی خطرہ بنی ہوئی ہیں۔

اس کے مؤثر جواب کے طور پر اسکاٹ لینڈ کے ایک موجد جیمز لونگ کروفٹ نے خاص کاغذ سے ایک بوتل بنائی ہے جو سمندر کے کھارے پانی میں رہتے ہوئے صرف تین ہفتوں میں گھل کر مکمل ختم ہوجاتی ہے۔ یہ بوتل حیاتی طور پر تلف (بایو ڈی گریڈیبل) ہونے والی ہے اور مکمل طور پر واٹر پروف بھی ہے۔ ان بوتلوں کے استعمال سے پلاسٹک کی بوتلوں کے پہاڑ کا دیرینہ مسئلہ حل ہوسکتا ہے۔ پلاسٹک سب سے زیادہ سمندری مخلوق کو ہلاک کررہا ہے اور بحرِ اوقیانوس میں ٹیکساس شہر کی جسامت کا پلاسٹک کا ڈھیر دیکھا گیا ہے۔

اس خبر کا ایک پہلو یہ بھی ہے کہ پوری دنیا میں پلاسٹک مافیا بہت مضبوط ہوچکی ہے اور ہر سال اس کےلیے اربوں ڈالر رقم خرچ کرتی ہے۔ دوسری جانب جیمز اس بوتل کو اپنے باورچی خانے میں اپنے ہاتھ سے بنارہے ہیں۔ یہ بوتل ایک ماہ تک سمندر میں رہتے ہوئے مکمل طور پر گھل جاتی ہے جب کہ پلاسٹک کی بوتل کم سے کم 450 سال بعد ختم ہوتی ہے۔ جیمز کی بوتل کا ڈھکن ایک سال میں ختم ہوجاتا ہے۔

اس بوتل کی سب سے اچھی بات یہ ہے کہ اس پر بہت لاگت نہیں آتی اور اسے بنانے میں صرف 70 روپے خرچ ہوتے ہیں جو پلاسٹک کی بوتل کےمقابلے میں بہت زیادہ ہے لیکن ماحول کا دکھ کم کرنے کے لیے یہ رقم کچھ زیادہ نہیں ۔ ہر سال ہم 14 ارب ٹن کچرا سمندروں میں پھینک رہے ہیں جن میں اکثریت پلاسٹک کی ہے۔

جیمز لانگ کرافٹ نے اپنی اختراع کےلیے انٹرنیٹ پر چندہ شروع کیا ہے اور کراؤڈ فنڈنگ ویب سائٹ پر 34 ہزار ڈالر مانگے ہیں جن میں سے نصف رقم جمع ہوچکی ہے۔ ان کا یہ قدم اس سیارے کے بہتر مستقبل کےلیے اہمیت رکھتا ہے۔

The post صرف تین ہفتوں میں پانی میں گھل کر ختم ہوجانے والی بوتل appeared first on i14 News.

Powered by WPeMatico

بھارت میں موسلا دھار بارش اور مٹی کے طوفان سے 110 افراد ہلاک

Hits: 0

بھارتی ریاستوں راجستھان اور اتر پردیش میں گردو غبار کے طوفان اور تیز بارشوں کے باعث 110 افراد ہلاک اور 300 سے زائد زخمی ہوگئے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق اترپردیش کے شہر آگرہ اور راجستھان کے تین اضلاع الور، بھرت پور اور دھول پور میں طوفانی بارشوں اور 130 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی ہواؤں نے بڑے پیمانے پر تباہی مچادی۔ طوفان سے اترپردیش میں 73 افراد ہلاک اور 160 زخمی ہوگئے، سب سے زیادہ ہلاکتیں آگرہ میں ہوئیں جن کی تعداد 43 ہے ہلاک ہونے والوں میں بچے بھی شامل ہیں، زیادہ ہلاکتیں پانی کے سبب گھر منہدم ہونے سے ہوئیں۔

میٹرو لوجیکل ڈپارٹمنٹ آف انڈیا کے مطابق شام ساڑھے آٹھ تا ساڑھے گیارہ بجے محض تین گھنٹوں کے دوران آگرہ میں 48.2 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔

اسی طرح راجستھان میں 35 افراد ہلاک اور 200 سے زائد زخمی ہوگئے جبکہ چار ہلاکتیں اتر کھںڈ میں اور بقیہ ہلاکتیں دیگر علاقوں میں ہوئیں۔ درخت اور ہورڈنگز گرنے، کچے مکانات منہدم ہونے اور آسمانی بجلی گرنے سے ہلاکتوں میں اضافہ ہوا۔

پریس ٹرسٹ آف انڈیا کے مطابق زخمیوں کی بڑی تعداد کی وجہ سے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔ ضلع بھر کے اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے۔ طوفانی بارش کے باعث لوگ خوف زدہ ہیں کیونکہ مون سون کی بارشوں کاسلسلہ شروع ہونے میں ابھی 6 ہفتے باقی ہیں لیکن اس سے قبل ہی بارشوں کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔

واضح رہے کہ بھارت کے شمالی علاقوں میں موسم گرما میں ایسی آندھیاں عام طور پر آتی ہیں لیکن اتنی زیادہ ہلاکتوں کا ہونا غیر معمولی بات ہے۔ گزشتہ ماہ کی 27 تاریخ کو آندھرا پردیش میں محض 13 گھنٹوں کے دوران 36 ہزار 749 بار آسمانی بجلی گرنے کے واقعات ریکارڈ کیے گئے تھے جو موسمی تغیر کی جانب اشارہ ہے۔

The post بھارت میں موسلا دھار بارش اور مٹی کے طوفان سے 110 افراد ہلاک appeared first on i14 News.

Powered by WPeMatico

اولاد کے خواہشمند افراد یہ غذائیں ضرور کھائیں

Hits: 0

بعض غذائیں جوڑوں میں بے اولادی ختم کرکے انہیں اولاد کی نعمت فراہم کرنے میں مدد کرسکتی ہیں۔

ہارورڈ یونیورسٹی کے ماہرین نے ایک تحقیقی مقالہ امریکن جرنل آف آبسٹریٹرکس اینڈ گائناکولوجی میں شائع کرایا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ بعض غذائیں جوڑوں میں بے اولادی ختم کرکے انہیں اولاد کی نعمت فراہم کرنے میں مدد کرسکتی ہیں۔

ڈاکٹر ہوزے شیوارو نے کہا کہ کئی لوگ غذاؤں اور تولید کے درمیان تعلق کو اہمیت نہیں دیتے لیکن اب گزشتہ 10 برس کی تحقیق کے بعد معلوم ہوا ہے کہ مرد ہو یا عورت ان کے اولاد پیدا کرنے کی صلاحیت میں غذائیں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔ مثلاً ہم جانتے ہیں کہ سافٹ ڈرنکس عملِ تولید (ری پروڈکشن) کے لیے بہت نقصان دہ ثابت ہوتی ہیں۔

ان ماہرین نے چند اہم غذاؤں پر زور دیا ہے کہ جو لوگ اپنے گھر میں بچوں کی کلکاریاں سننا چاہتے ہیں وہ انہیں ضرور آزمائیں۔

سامن مچھلی

سامن میں اومیگا تھری فیٹی ایسڈ کی بڑی مقدار ہوتی ہے جو مرد اور عورت کے تولیدی نظام میں دورانِ خون کو تیز کرتی ہے۔ اس میں موجود بعض تیزاب جسمانی ہارمون کو بہتر بناتے ہیں اور مردانہ مادہ تولید کو بہتر کرتے ہیں۔

اگر سامن مچھلیاں دستیاب نہ ہوں تو دیگر اقسام کی چکنائی والی مچھلیوں میں بھی یہ پایا جاتا ہے اور اس کا دوسرا حل اومیگا تھری سپلیمنٹ بھی ہے جو پاکستان بھر میں دستیاب ہے۔ اومیگا تھری فیٹی ایسڈز دل اور دورانِ خون کے لیے بھی بہت مفید ثابت ہوچکے ہیں۔

پالک

پالک پاک وہند کی عام غذا ہے اور اس میں موجود فولیٹ اور وٹامن بی خواتین میں بیضے کی نشوونما کو بہتر بناتے ہیں جس سے اولاد کی پیدائش کا امکان بڑھ جاتا ہے۔

اس میں موجود فولک ایسڈ خلوی تقسیم (سیل ڈویژن) اور ڈی این اے کی پیداوار میں مدد دیتا ہے اور صحتمند حمل میں مدد فراہم کرتا ہے۔ دوسری جانب فولاد، کیلشیئم اور دیگر ضروری اجزا بچے میں دماغ اور ریڑھ کی ہڈی کی نشوونما کو بڑھاتے ہیں۔ پالک میں موجود کلوروفل خواتین میں جنسی رحجان بڑھاتا ہے اور ان کے مخصوص اعضا میں دورانِ خون تیز کرتا ہے۔

مکمل اناج

مکمل اناج یا ہول گرین کے فوائد آئے دن سامنے آتے رہتے ہیں۔ ان میں وٹامن کی کئی اقسام، وٹامن بی نائن یا فولک ایسڈ، اور وٹامن بی 12 بھی ہوتا ہے۔ تحقیق سے یہ بات ثابت ہوچکی ہے کہ اولاد سے محروم جوڑوں میں اس وٹامن کی کمی بھی ہوتی ہے۔ مختصراً ہم کہہ سکتے ہیں کہ مکمل اناج تولید اور بچے کی پیدائش میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔

مکمل اناج کا دوسرا اہم جزو فائبر (ریشے) ہیں جو تولیدی ہارمون ایسٹروجن بڑھانے کے علاوہ خون میں شکر کی مقدار قابو میں رکھتے ہیں۔ اسی لیے اوٹ میل ، دلیے اور جو کو اپنی غذا کا حصہ ضرور بنائیں۔

پھلیاں اور لوبیا

سبزیوں میں رنگ برنگی پھلیاں اور لوبیا کسی نعمت سے کم نہیں ہیں۔ ان میں فولیٹ، فائبر اور پروٹین کی بڑی مقدار ہوتی ہے۔

ہارورڈ اسکول ہو بپلک ہیلتھ نے 17500 خواتین نرسوں کا جائزہ لیا جو ماں نہیں بن پارہی تھیں۔ ان میں سے جو خواتین جانوروں سے پروٹین حاصل کررہی تھیں ان میں بانجھ پن کا خطرہ 39 فیصد تھا جب کہ پودوں مثلاً لوبیا وغیرہ سے پروٹین لینے والی خواتین میں حمل ٹھہرنے کی مشکلات کی شرح کم تھی۔ لوبیا اور پھلیوں میں موجود فولاد دورانِ حمل خون کی کمی کو بھی دور کرتا ہے۔

ڈارک چاکلیٹ

گہرے رنگ کی چاکلیٹ کے ان گنت فوائد سامنے آچکے ہیں۔ اس میں ایل آرگینائن نامی امائنوایسڈ پایا جاتا ہے جو مردوں میں اسپرم کی تعداد اور حرکت کو بڑھاتا ہے۔ اس میں موجود کئی اجزا ڈپریشن کو دور کرتے ہیں اور دل کو تندرست رکھتے ہیں۔

گہرے رنگت والی چاکلیٹ تھوڑی کڑوی ہوتی ہے لیکن اس کی تاثیر بہت اچھی ہے کیونکہ یہ جسم میں دورانِ خون کو بہتر کرتی ہے۔ خون کی گردش بہتر ہونے سے جنسی اور تولیدی نظام بھی بہتر ہوتا ہے۔

The post اولاد کے خواہشمند افراد یہ غذائیں ضرور کھائیں appeared first on i14 News.

Powered by WPeMatico

دنیا کی معمر ترین مکڑی فوت ہوگئی

Hits: 0

دنیا میں سب سے زیادہ عرصے زندہ رہنے والی آسٹریلیا کی مکڑی موت سے ہمکنار ہوگئی۔

آسٹریلوی میڈیا کے مطابق آسٹریلیا میں موجود یہ مادہ مکڑی ٹریپ ڈور اسپائیڈر کی نسل سے تعلق رکھتی تھی اور اس نے اب تک طویل العمری کے تمام ریکارڈ توڑے تھے۔ یہ مکڑی آسٹریلیا کی کرٹِن یونیورسٹی میں موجود تھی اور اس نے اپنی ہی نسل کی پہلی مکڑی سے 15 برس زیادہ کی زندگی پاکر اس کی 28 سالہ زندگی کا ریکارڈ توڑ ڈالا ہے۔

ٹورنٹیولا مکڑیاں عموماً 20 سال سے کچھ زیادہ عرصے تک زندہ رہتی ہیں جبکہ تسمانین غار والی مکڑیاں 40 سال تک زندہ دیکھی گئی ہیں۔ تاہم ماہرین کے مطابق ٹریپ ڈور اسپائیڈر زیادہ سے زیادہ 20 سال تک زندہ دیکھی گئی ہیں لیکن کرٹن یونیورسٹی کی 16 نمبر والی اس مکڑی نے ماہرین کو 43 برس تک جی کر حیران کردیا۔
کرٹِن یونیورسٹی کے اسکول آف مالیکیولر اینڈ لائف سائنسز کی پروفیسر لینڈا میسن کے مطابق یہ ہماری معلومات کے مطابق سب سے زیادہ عرصے زندہ رہنے والی مکڑی تھی۔ اس پر تحقیق سے ہمیں مکڑیوں کے بارے میں بہت معلومات ملی ہیں۔ اس مکڑی کو 1974 میں آسٹریلیا کی مشہور ماہرِ حشریات باربرا یورک نے قید کیا تھا۔ ان کی تحقیق سے ماہرین کو مکڑیوں کی زندگی اور ان کے اندرونی نظام کو جاننے میں بہت معلومات ملی ہیں۔

ٹریپ ڈور مکڑیاں خطرناک دکھائی دینے کے باوجود انسان کے لیے نقصان دہ نہیں ہوتیں۔ یہ اپنے گھر خود بناتی ہیں اور پانچ سال کی عمر میں بلوغت تک پہنچ جاتی ہیں۔ یہ مردہ مکڑیوں کے گھر میں نہیں رہتیں اور یہ اپنا گھر ٹوٹنے پر ازخود اس کی مرمت کرتی ہیں۔

16 نمبر کی یہ مکڑی آخری مرتبہ اپنے گھر میں اکتوبر 2016 میں دیکھی گئی تھی۔ اس کے گھر پر ایک بھِڑ نے حملہ کردیا تھا اور ماہرین کا خیال ہے کہ شاید یہ اسی حملے میں مری ہے تاہم اس کے مرنے کی خبر اب سامنے آئی ہے۔

ماہرین کے مطابق یہ مکڑیاں ماحول میں اہم کردار ادا کرتی ہیں اور زمین پر موجود قدیم ترین کیڑوں میں سے ایک ہیں۔

The post دنیا کی معمر ترین مکڑی فوت ہوگئی appeared first on i14 News.

Powered by WPeMatico

پیرو کی دلفریب ست رنگی پہاڑیاں

Hits: 0

پیرو میں کرہ ارض کی انوکھی اور رنگ برنگی پہاڑیاں موجود ہیں جہاں تک رسائی مشکل ہے لیکن پھر لوگوں کی بڑی تعداد ان عجوبوں کو دیکھنے آتی ہے۔

اس علاقے میں چار ارضیاتی سلسلوں کو ایک ساتھ دیکھا جاسکتا ہے۔ ایک جانب تو اینڈین پہاڑیوں کی وہ بلندی دیکھی جاسکتی ہے جو اس سلسلے کے فطری طور پر اٹھنے کے نتیجے میں پیدا ہوئی ہے۔ دوسری جانب گلیشیئر کے پھسلنے سے نشیب اور وادیاں بنی ہیں۔

تیسری اور اہم پرمین فارمیشن ہے جس میں سرخ، نیلا اور نیلگوں مائل سبز رنگ دیکھے جاسکتے ہیں جبکہ ساتھ ہی چونے کے پتھر کے ذخائر بھی ہیں۔ یہ سب مل کر پہاڑوں کو رنگین بناتے ہیں اور دیکھنے والے کو گمان ہوتا ہے کہ گویا کسی نے ان پہاڑوں کو فوٹوشاپ کے ذریعے تبدیل کیا ہے۔

اس علاقے میں مقامی جانور لاما پایا جاتا ہے اور یہاں رہنے والے لوگ بنیادی طور پر چرواہے ہیں۔ دلکش اور قوسِ قزح جیسی پہاڑیوں کو دیکھنے کےلیے کم ازکم دو گھنٹے تک پہاڑیوں سے گزرنا پڑتا ہے اور 5000 میٹر بلندی پر ست رنگی پہاڑ کا ہوش ربا منظر نمایاں ہوتا ہے۔

ایسا لگتا ہے کہ پہاڑیوں پر خوبصورت رنگوں کی تہہ بچھائی گئی ہے لیکن ماہرین کے مطابق اس عمل میں کروڑوں سال لگے ہیں جن میں ارضی سرگرمیوں اور ٹیکٹونک پلیٹوں کی حرکت بھی شامل ہے۔

The post پیرو کی دلفریب ست رنگی پہاڑیاں appeared first on i14 News.

Powered by WPeMatico

سانپ سے متاثرہ خاتون علاج کے لیے گوبر میں دفنانے سے ہلاک

Hits: 0

بھارت میں ایک خاتون کو سانپ نے ڈس لیا تو ایک سپیرے نے علاج کے لیے اسے گوبر میں رکھنے کی تجویز دی جس کے بعد وہ خاتون گوبر کی وجہ سے دم گھٹنے کے سبب ہلاک ہوگئی۔

بھارت کے ایک دیہات میں دیوندری نامی خاتون آگ جلانے کے لیے لکڑیاں چن رہی تھی کہ ایک سانپ نے اسے ڈس لیا جس کے بعد اس کے پریشان حال شوہر مکیش نے اسے مورارے نامی ایک سپیرے کے مشورے پر گائے کے گوبر تلے دبا دیا۔ سپیرے کا مشورہ تھا کہ گوبر سانپ کا سارا زہر چوس لے گا اور اس کی بیوی اچھی ہوجائے گی لیکن 75 منٹ تک گوبر میں دبے رہنے سے خاتون کا انتقال ہوگیا۔

اترپردیش میں واقع بلند شہر کے نواحی گاؤں کے لوگ جب مکیش کے گھر پہنچنے تو انہوں نے دیکھا کہ 35 سالہ دیوندری گائے کے گوبر میں مکمل طور پر دبادی گئی تھی اور مکیش اس کے پاس بیٹھا منتر پڑھ رہا تھا۔ یہ عمل سوا گھنٹے تک جاری رہا لیکن گوبر میں دبے رہنے سے اس کا دم گھٹ گیا اور وہ ہلاک ہوگئی۔

مکیش نے اپنی بیوی کے انتقال پر کہا کہ’ مجھے یقین نہیں آرہا ہے کہ وہ مر جائے گی۔‘ اس واقعے پر سپیرے نے کہا کہ وہ ایک عرصے سے گاؤں میں سانپ اور زہریلے جانوروں کے کاٹے کا علاج کررہا ہے خاتون کی ہلاکت مکمل طور پر گوبر میں دبے رہنے کی وجہ سے ہوئی ہے۔

سپیرے کے مطابق خاتون کوبرا یا کسی اور انتہائی زہریلے سانپ کی وجہ سے ہلاک ہوئی ہے۔ جب مقامی پولیس سے اس سے معاملے کے بارے میں پوچھا گیا تو پولیس نے مکمل لاتعلقی کا اظہار کیا۔

The post سانپ سے متاثرہ خاتون علاج کے لیے گوبر میں دفنانے سے ہلاک appeared first on i14 News.

Powered by WPeMatico

نواز شریف پاکستان کو کھوکھلا کرکے ہمیں آنکھیں دکھا رہے ہیں،آصف زرداری

Hits: 0

پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ نوازشریف پاکستان کو کھوکھلا کرکے اب ہمیں آنکھیں دکھا رہے ہیں جب کہ عمران خان کا کوئی منشور ہی نہیں ہے۔

لاہور میں پارٹی کارکنوں کی تقریب سے خطاب کے دوران سابق صدر نے مخالفین کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ نوازشریف نے ملک کو کھوکھلا کردیا اور اب اداروں، ججوں اور ہمیں آنکھیں دکھا رہے ہیں جب آپ نے کھلونا توڑ دیا تو اب ہم پر الزام لگا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسٹیج پر چڑھ کر لمبی لمبی تقریریں کرنے والے عمران خان کے پاس کوئی منشور یا پالیسی نہیں ہے۔

سابق صدر نے کہا کہ ہمارے دور میں سرحدوں پر کوئی محاذ گرم نہیں تھا کیونکہ ہمارے پاس خارجہ پالیسی اور ڈپلومیسی تھی لیکن اب محاذ گرم ہیں اور اس کی وجہ موجودہ حکومت کی کوئی خارجہ پالیسی نہ ہونا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے غریبوں ،کسانوں اور کاشت کاروں کے لیے نئی پالیسی بنائی ہے میں ان کے لیے نئے فلاحی منصوبے بنائے ہیں، نئی پالیسی کےتحت یوریا کی بوری 500 روپے میں ملے گی جب کہ شہر میں بسنے والے غریبوں کے لیے بھی راشن کارڈ کا اجرا کیا جائے گا۔

آصف زرداری کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے 18 ویں ترمیم دی تو پورے پاکستان کے لیے دی، بے نظیر بھٹو فاٹا کے انضمام کے لیے عدالت میں گئیں کیونکہ فاٹا کے عوام اتنے ہی پاکستانی ہیں جتنے میں اور آپ پاکستانی ہیں، ہم نے جو کام پانچ سال پہلے کیے آج وہ یہ سب کررہے ہیں۔

The post نواز شریف پاکستان کو کھوکھلا کرکے ہمیں آنکھیں دکھا رہے ہیں،آصف زرداری appeared first on i14 News.

Powered by WPeMatico

آرمی چیف سے ترکش چیف آف جنرل اسٹاف جنرل ہولوسی اکار کی ملاقات

Hits: 0

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ترکش چیف آف جنرل اسٹاف جنرل ہولوسی اکار نے ملاقات کی جس میں باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق ترکش چیف آف جنرل اسٹاف جنرل ہولوسی اکار نے جی ایچ کیو کا دورہ کیا، اس موقع پر ترک جنرل کو پاک فوج کے چاق و چوبند دستے نے گارڈ آف آنر پیش کیا جب کہ ترک چیف آف جنر ل اسٹاف نے یادگار شہدا پر پھول بھی چڑھائے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور اور افواج میں تعلقات پر تبادلہ خیال کیا گیا، اس کے علاوہ علاقائی سلامتی کی صورتحال اور دفاعی تعاون بڑھانے کے اقدامات پر بات چیت بھی کی گئی۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان کے مطابق مہمان جنرل نے پاک فوج کی دہشت گردی کے خلاف جنگ اور خطے میں استحکام کے لیے مخلصانہ کوششوں کو سراہا جب کہ آرمی چیف جنرل قمر باجوہ نے ترک جنرل کو فنانشل ایکشن ٹاسک فورس میں پاکستان کی حمایت پر شکریہ ادا کیا۔

The post آرمی چیف سے ترکش چیف آف جنرل اسٹاف جنرل ہولوسی اکار کی ملاقات appeared first on i14 News.

Powered by WPeMatico